پروفیسرڈاکٹر محمد عقیل |

مسلمانوں کے ایمان اور اخلاق میں کمزوریوں کی جدید اندازمیں نشاندہی کرنااور اصلاح کے لئے سائنٹفک طرز پر حل تجویز کرنا اس سائٹ کے مقاصد ہیں۔۔۔۔۔۔۔قد افلح من زکھا۔

سائٹ کا تعارف

شائع ہونے کا وقت اور تاریخ Sunday Nov 13, 2011


بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
اس سائٹ کے مقاصد و اہداف کیا ہیں؟
اگر غور سے دیکھا جائے تو پاکستانی سوسائٹی دو واضح گروہوں میں تقسیم ہوچکی ہے۔ ایک طبقہ روایتی مذہبی لوگوں پر مشتمل ہے اور دوسرا جدید یت پسند لوگوں کا ہے۔ علماء حضرات کا تعلق چونکہ روایتی گروہ سے ہے اس لئے عام طور پر ان کا رابطہ جدید پڑھے لکھے طبقے سے نہیں ہوپاتا۔ اس جدید پڑھے لکھے طبقے میں ایک بڑی تعداد ایسے مخلص لوگوں کی ہے جو دین کے ساتھ اخلاص رکھتے اور اسے سمجھ کر اپنی زندگیوں میں لانا چاہتے ہیں۔ لیکن قدیم روایتی علماء سے ان کا مناسب رابطہ نہ ہونے کی صورت میں وہ اپنے سوالات و مسائل کا تسلی بخش جواب نہیں تلاش کرپاتے اور دین سے دور ہوتے چلے جاتے ہیں۔
اس سائٹ کا بنیادی مقصد مسلمانوں کی علمی اور عملی کوتاہیوں کی نشاندہی کرنا، ان سے بچنے کے لئے حل تجویز کرنا اور تربیت کا ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے تاکہ لوگ اللہ کی بندگی اختیار کرکے دنیا و آخرت کی کامیابی کے مستحق بن جائیں۔
دوسرا مقصد اس سائٹ کے ذریعے اس جدت اور قدامت پسند گروہوں میں کمیونکیشن گیپ کو کم کرنا اور اسلامی تعلیمات کو عصر حاضر کے اسلوب میں پیش کرنا ہے۔ لیکن اس مطلب ہرگز یہ نہیں کہ اسلام کے ابدی اصولوں میں ترمیم کردی جائے۔ ہرگز نہیں۔ بلکہ اس کا مفہوم محض پریزینٹیشن کی تبدیلی ہے اور اس سے زیادہ کچھ اور نہیں۔
اس سائٹ کا تیسرا مقصد یہ ہے کہ مسلمانوں کو فرقہ واریت اور مسلکی تعصب سے بلند کرنے کے لئے ایک ایسا پلیٹ فارم مہیا کہ جائے جس کے ذریعے لوگ خالص قرآن اور سنت کے ذریعے دین کی تعلیمات جان سکیں۔
ایک اور مقصد مسلمانوں کو ان کے حقیقی ورثے یعنی اخلاقیات کو اپنانے کی دعوت دینا ہے۔ اسلام محض چند عبادات کا مجموعہ نہیں بلکہ یہ اخلاقیات کو بھی شامل کرتا اور انہیں عبادات جیسی اہمیت دیتا ہے۔ چنانچہ جس طرح نماز ، روزہ، حج اور زکوٰۃ کو ترک کرنا گناہ میں آتا ہے ویسے ہی جھوٹ، غیبت، بہتان، حسد، کینہ، حرص اور زنا بھی بڑے گناہوں میں شمار ہوتے ہیں۔ اس بلاگ کا ایک اہم ٹارگٹ مسلمانوں کو ان گناہوں پر متنبہ کرنا اور ان سے بچنے پر تعلیم اور تربیت فراہم کرنا ہے۔
سائٹ کن اجزا ء پر مشتمل ہے؟
یہ سائٹ صرف مضامین پر ہی مشتمل نہیں بلکہ اس میں ایک فرد کی تعلیم، اصلاح اور تربیت کے جدید ٹولز موجود ہیں۔ ان میں “مسلم شخصیت کو جانچنے کا کیلولیٹر، رمضان ورک بک ، اصلاحی ورکشاپ، تربیتی وڈیوز، بچوں کی تربیت پر ایک مکمل گائیڈ، آن لائن عربی پروگرام، قرآنی تفاسیر کا آن لائن تقابلی مطالعہ اور دیگر پروگرامز شامل ہیں۔
ان ٹولز کے علاوہ اس بلاگ کے ذریعےآپ کے مذہبی اور سماجی سوالات اور مسائل کا جواب بھی فراہم کیا جاتا ہے۔اسکے ساتھ ہی آپ کے تبصروں کو شایع کرتا ہے تاکہ دو رخی کمیونکیشن کے ذریعے ایک مثبت مکالمے کی فضا پیدا کی جاسکے۔
اس مشن میں تعاون کس طرح کیا جائے؟
اس مشن میں تعاون کی پہلی صورت تو یہ ہے کہ اس کی کامیابی کے لئے اللہ سے دعا کریں کہ اللہ ہماری ان کاوشوں کو قبول فرمائیں اور اسے دنیا و آخرت کی فلاح کا ذریعہ بنائیں۔
تعاون کی ایک شکل یہ ہے کہ اس بلاگ پر شایع ہونے والے مضامین اور پروگراموں کا مطالعہ کریں اور ان پر اپنے مثبت یا تنقیدی کمنٹس دیں تاکہ کسی بھی غلطی کی جانب جوع کرکے اس کی اصلاح کرلی جائے۔
ایک صورت یہ بھی ہے کہ ان مضامین کو انٹرنیٹ ، پرنٹ آؤٹ یا کسی اور ذریعے سے لوگوں میں پھیلایا جائے تاکہ اللہ کا پیغام زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچ سکے۔ اسی کے ساتھ ہمارا معاشرہ ایک صالح اور پاکیزہ سوسائٹی میں تبدیل ہوسکے۔ اگر ایسا ہوگیا تو یہ ایک صدقہ جاریہ ہوگا اور اس کا اجر ہمیں قیامت تک ملتا رہے گا۔ اگر ایسا نہ ہوا تب بھی یہ یہ ہماری بڑی کامیابی ہوگی کیونکہ ہمارا کام لوگوں تک پہنچادینا ہے، اور ہم لوگوں پر داروغہ بنا کر نہیں بھیجے گئے ہیں۔چنانچہ اصل مقصد دعوت کی کامیابی یا ناکامی نہیں بلکہ اللہ کی رضا کا حصول ہے جو دو نوںصورتوں میں ہمیں مل سکتی ہے۔
تقبل اللہ منی ومنکم
پروفیسر محمد عقیل

10 تبصرے کیے گئے ہیں »

السلام علیکم۔
آپکے چھوٹے بھائی سلمان نے مجھے اس بلوگ کے بارے میں بتایا۔ آپکا بلوگ دیکھ کر بہت خوشی ہوئی۔
ایک صاحبِ علم سے بہت کچھ سیکھنے کو ملے گا، انشاءاللہ آپ کے بلوگ پر آتے رہیں گے۔

تسلیمات
محمد امین قریشی

November 17th, 2011 | 2:43 am

محترم امین بھائی
السلام علیکم
آپ کی حوصلہ افزائی کا شکریہ، میں بھی دین کا یک طالب علم ہوں بس جو کچھ خود سمجھتا ہوں وہ آپ دوستوں سے شیئر کرلیتا ہوں۔ آپ کو اپنے بلاگ پر خوش آمدید کہتا ہوں

November 17th, 2011 | 11:21 am

Assalamalikum
Aap jaise mukhlis logon ki Pakistan ko bohat zaroorat hay.Allah talla apki is kawish ko qoobol farmay.Ameen

December 27th, 2011 | 7:59 pm

السلام علیکم اور آپ کے تبصرے کا بہت بہت شکریہ

December 27th, 2011 | 8:26 pm

assalam o alaikum aqeel sahib
aap kaisay hain? main aap ka blog regular parhta tha lekn ab internet ki facility avialable nahi hay is laiy ab kabhi kabhar ittefaq hota hay. may aap k blog agar chohun to kia ktahareer news paper ya magazine me shaya kar sakta hun?
plz mujhe zaroor jawab dejiay, ye mera mobile number hai, is per agar msg kia to mehrobani hogi, kionky internet ka thora masla hay abhi.
0336-9716525
Muhammad Fida Hussain From Mardan Khuber Pakhtunkhwa.

June 21st, 2012 | 10:55 am

Dear Brother Aqeel,

Assalam-o-Alaikum,

I am a new visitor to your blog and pray for your health, eman and istiqamah on Allah’s path. Have you heard about Timelenders? A personal development, management training and consulting firm based out of Karachi. I belong to Timelenders and strongly believe that you must attend our Strategic Visions and Strategic Time Management workshops. Please see our website http://www.timelenders.com for more details and let me know if we can meet.

Jazakallah & Wassalam,

Yameenuddin Ahmed

July 21st, 2012 | 8:28 am
Farooq Ahmed:

السلام علیکم
مجھے ماہ رمضان کے بعد کچھ نوجوانوں کو ہفتہ وار پڑھانے کا موقع ملے گا
اس مقصد کے ساتھ کہ ان کے ساتھ وہ باتیں کی جائیں جو شاید ان کو اسکول
کالج میں نہیں سکھائی جاتیں۔ یہ میٹرک ، کالج اور اے او لیول کے طالب علم ہونگیں۔
آپ سے مشورہ درکار ہے کہ مضامین کون سے ہوں۔ میں نے ایک خاکہ بنایا ہے جس میں سیرت نبوی،
انبیائے کرام ، اس دنیا کی تخلیق اور انسان کا مقصد اور ایک اہم مضمون جس کے لئے
آپ کی خصوصی مدد درکار ہے تاریخ کا ایسا مطالعہ جس میں ان نوجوانوں کو عظیم سلطنتوں اور بادشاہوں
کے عروج و زوال کے اسباب بتائیں جائیں۔
اس سلسلے میں مواد درکار ہے، چاہے تحریری ہو، کتاب ہو، ملٹی میڈیا ہو، وغیرہ ۔ اردو ہو تو بہت بہتر
ورنہ انگریزی بھی ۔
جزاک اللہ

July 28th, 2012 | 10:49 am

جناب فاروق احمد صاحب

السلام علیکم

یہ جان کر خوشی ہوئی کہ آپ رمضان میں کچھ طالبات کو دینی تعلیم مہیا کرنا چاہتے ہین۔ آپ نے لکھا ہے کہ یہ کلاس ہفتے وار ہوگی۔ رمضان کا یک ہفتہ تو گذر چکا ہے اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ کے پاس زیادہ سے زیادہ تین ہفتے ہیں۔ لیکن آپ نے جو موضوعات کی فہرست دی ہے وہ تین کلاسوں میں پڑھانا نہ تو ممکن ہے اور نہ ہی مناسب۔ میرے خیال میں اگر آپ اپنی کلاس کو ان طالبات کی شخصیت کی تعمیر یعنی تزکیہ نفس کے لئے استعمال کریں اور باقی موضوعات کو اسائنمنٹ کے طور پر دے دیں تو مناسب ہوگا۔ تزکیہ نفس پر وسیع مواد میرے بلاگ پر “تزکیہ نفس “کے فولڈر میں موجود ہے۔ اس کےساتھ ساتھ میں کچھ پاور پوائینٹ کی پریزنٹیشن بھیج رہا ہوں ۔ ان سے بھی آپ پڑھانے میں مدد لے سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ درج ذیل سائٹ سے بھی آپ تاریخ اور دیگر موضوعات پر مواد اردو میں حاصل کرسکتے ہیں۔
http://www.mubashirnazir.org

July 28th, 2012 | 2:02 pm
Farooq Ahmed:

جزاک اللہ جناب۔ مجھ سے سمجھانے میں سہو ہوا ہے۔ طالبات نہیں بلکہ طلباء ہونگیں اور یہ رمضان کے بعد شروع ہوگا۔ تزکیہ نفس اور مبشر بھائی کے سائٹس سے استفادہ کر رہا ہوں۔ آپ براہ مہربانی پریزینٹیشنس بھیج دیجئے۔ تاریک عالم کے متعلق بھی کچھ مل جائے جن کے مطالعہ سے قوموں کے عروج و زوال کے نکات نکالیں جا سکیں۔

July 28th, 2012 | 2:25 pm
Malik:

Aqil sahib salam alaikum

I like to share with you my humble research about Hazrat Umar,appreciate if you can send your Email address to me on the following address
malik.ashtar72@yahoo.com
wassalam

October 18th, 2012 | 11:27 pm
تبصرہ کریں

تبصرہ :