پروفیسرڈاکٹر محمد عقیل |

مسلمانوں کے ایمان اور اخلاق میں کمزوریوں کی جدید اندازمیں نشاندہی کرنااور اصلاح کے لئے سائنٹفک طرز پر حل تجویز کرنا اس سائٹ کے مقاصد ہیں۔۔۔۔۔۔۔قد افلح من زکھا۔

نفس قابو کیوں نہیں ہوتا؟

شائع ہونے کا وقت اور تاریخ Saturday Dec 19, 2015

نفس قابو کیوں نہیں ہوتا؟

سوال: اگر انسان میں نفس رکھا گیا ہے اور اسے قابو کرنے کی طاقت بھی دی گئی تو
پھر کبھی کبھی ہم سے نفس قابو کیوں نہیں ہوتا؟

جواب: دیکھیں پہلے تو نفس کے بارے میں ایک غلط فہمی دور کرلیں۔ نفس سے مراد ہماری شخصیت ہے۔ اس شخصیت کے اچھے اور برے پہلو ہوتے ہیں ۔ ہمارا امتحان یہی ہے کہ برے پہلووں کو اچھا بنائیں۔ اسی برے پہلو کو نفس امارہ کہا جاتا ہے۔ نفس ہم سے قابو ہوتا ہے، البتہ بعض اوقات کچھ بری عادتیں ، سوچیں ، خیالات یا وساوس دیر سے جاتے ہیں اور ان پر محنت کرنی پڑتی ہے۔ یہی نفس کا امتحان ہے۔ بس ہمت نہیں ہارنی چاہئے اور چلتے رہنا چاہئے۔ ایک وقت آتا ہے کہ اللہ خود ہمارا نفس ہمارے قابو میں دے دیتے ہیں لیکن محنت ، حوصلہ اور صبر شرط ہے۔
از پروفیسر محمد عقیل

تبصرہ کریں

تبصرہ :